Name entered in ECL

شہباز شریف کا کھانے پینے کی اشیا پر ٹیکس ختم کرنے کا مطالبہ

اسلام آباد: مسلم لیگ ن کے صدر اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے کھانے پینے کی اشیا پر ٹیکس ختم کرنے کا مطالبہ کردیا۔

مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف نے قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ چینی، دود، دہی سمیت کھانے کی اشیا پر نئے ٹیکس ختم کیے جائیں، سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں کم از کم 20 فیصد اضافہ کیا جائے۔

شہباز شریف نے کہا کہ مزدوروں کی کم سے کم اجرت 25 ہزار روپے کی جائے، ایل این جی پر ٹیکس اور مشینری پر سیلز ٹیکس فوری ختم کیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے تنقید کرنے کے اوپر وقت ضائع کردیا، ہم صرف خواب دکھاتے نہیں بلکہ اس کی تعبیر کرتے ہیں جس طرح بجلی کے اندھیرے ختم کیے اسی طرح مہنگائی کو بھی ختم کریں گے۔

قائد حزب اختلاف نے کہا کہ ایم ایل ون منصوبے پر 40 فیصد کا اضافہ ہوچکا ہے، ہم نے بیٹھے بٹھائے اربوں روپے کا ٹیکا لگوالیا ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ جو وعدے ماضی میں کیے تھے آئندہ موقع ملا تو پورے کریں گے، ماضی میں مفت ادویات، لیپ ٹاپ دیے تھے اللہ نے موقع دیا تو دوبارہ دیں گے، ہم خواب دکھاتے نہیں انہیں پورا بھی کرتے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ ہمارے زمانے میں ہائر ایجوکیشن کا بجٹ 33 ارب کا تھا، آج ان کے دور میں ہائر ایجوکیشن کا بجٹ 29 ارب کا ہے، جنوبی پنجاب پر یہ لوگ سیاست کرتے ہٰں، ہم لیپ ٹاپ دیتے تھے تو تنقید کی جاتی تھی، کسی کو پتا تھا کہ وہی لیپ ٹاپ آج لاکھوں کا کاروبار بن جائے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں