On the third day of Eid

عید کے تیسرے روز بھی سنت ابراہیمی کی ادائیگی کا سلسلہ جاری

عید قرباں کے تیسرے روز بھی فرزندان توحید سنت ابراہیمی پر عمل کرتے ہوئے جانوروں کو اللہ تعالی کی راہ میں قربان کرنے کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہیں۔

قرب الہی کے حصول کیلئے ملک بھر میں آج بھی ہزاروں جانوروں کو قربان کیا جا رہا ہے، جو لوگ گذشتہ روز قربانی نہیں کر پائے آج عید کے تیسرے دن مقدس فریضہ سر انجام دینے میں مصروف ہیں۔ قربانی کے ساتھ ساتھ چٹ پٹے پکوان تیار کرنے کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ غربا اور مسکینوں میں گوشت تقسیم کر کے مسلمان قربانی کی حقیقی روح کے مطابق عمل کر رہے ہیں۔

قربانی کیلئے شہری یا تو جانوروں کو پالتے ہیں یا پھر منڈی سے من پسند جانوروں کا انتخاب کرتے ہیں تاہم ان جانوروں کو جب اللہ کی راہ میں قربان کرنے کا وقت آتا ہے تو اصلی قصائی کا ملنا محال ہو جاتا ہے، ایسے میں دیہاڑی دار اناڑی قصائی بھی میدان میں آ جاتے ہیں، جو ایک طرف جانوروں کو ذبح کرنے کی اہلیت نہیں رکھتے تو دوسری طرف وہ اس مقدس مذہبی فریضے کی ادائیگی کے شرعی تقاضوں سے بھی لا علم ہوتے ہیں، اس صورتحال میں اناڑی قصائیوں کی وجہ سے قربانی کے جانوروں کو مختلف اذیتوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

کئی بار دیکھا گیا ہے کہ غلط تکنیک کے استعمال کی وجہ سے قربانی کے جانور بے قابو ہو جاتے ہیں جس کے بعد قصائیوں کی جانب سے جانوروں پر بہیمانہ تشدد کیا جاتا ہے، اس مار دھاڑ کے نتیجے میں قربانی کے جانوروں کو شدید ترین جسمانی اذیت کا سامنا کرنا پڑتا ہے، بعض بے رحم افراد تشدد سے قربانی کے جانوروں کی ہڈیاں تک توڑ دیتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں