Speaker Punjab Assembly decides not to accept resignations

سپیکر پنجاب اسمبلی کا اپوزیشن ارکان کے استعفے منظور نہ کرنے کا فیصلہ

 اپوزیشن ارکان اسمبلی کے استعفوں کا معاملہ، سپیکر پنجاب اسمبلی نے استعفے منظور نہ کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ سپیکر پنجاب اسمبلی کو 6 ماہ تک استعفے منظور نہ کرنے کا اختیار حاصل ہے۔

مسلم لیگ ن کے ارکان اسمبلی کے استعفوں کا معاملہ، چھ ماہ کے دوران سپیکر پنجاب اسمبلی مستعفی ہونے والے رکن کو طلب کر سکتا ہے اور رکن اسمبلی مستعفی ہونے کی وجوہات بیان کرنے کا بھی پابند ہے۔ مستعفی ہونے والے رکن اسمبلی سے پوچھا جائے گا کہ وہ استعفا ذاتی خواہش یا کسی کے دباؤ میں آ کر تو نہیں دے رہا؟ سپیکر جب تک استعفے الیکشن کمیشن کو نہیں بھجواتے رکن مستعفی تصور نہیں کیا جائے گا۔ استعفے الیکشن کمیشن کو بھجوانے کے بعد نئے الیکشن کے شیڈول کا اعلان ہو گا۔ ترجمان پنجاب اسمبلی سپیکر آفس کے مطابق ابھی تک کسی بھی رکن کی جانب سے استعفی نہیں ملا، چھ ماہ بعد بھی استعفا منظور کرنا یا نہ کرنا سپیکر کا استحقاق ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں