case-registered-against-pmln-leadership

شیرا کوٹ جلسہ کرنے پر ن لیگی قیادت سمیت 500 افراد کے خلاف مقدمہ درج

لاؤڈ سپیکر پر عوام کو اشتعال دلانے کا الزام، دو روز قبل شیرا کوٹ جلسہ کرنے پر لیگی قیادت سمیت 500 افراد کے خلاف مقدمہ درج۔ تفصیلات کے مطابق ایاز صادق، خواجہ سعد رفیق ،رانا مشہود،مہر اشتیاق و دیگر نامزد ہیں۔

لاہور: چار دسمبر کو ہونے والے شیراکوٹ جلسے کے حوالے سے پولیس نے ایکشن لے لیا ہے۔ ذرائع کے مطابق لاؤڈ سپیکر ایکٹ کی خلاف ورزی، عوام کو اشتعال دلانے، کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی کرنے کے الزامات پر اعلیٰ ن لیگی قیادت سمیت 500 افراد پر مقدمات درج کیے گئے ہیں۔

ایف آئی آر کے متن کے مطابق کارکنان نے روڈ پر اکٹھے ہو کر، سٹیج لگا کر حکومت کیخلاف تقاریر کیں اور عوام کو اشتعال دلانے کی کوشش کی۔ تفصیلات کے مطابق ”13 دسمبر کے جلسے میں حکومت کا تخت پلٹ دو“ جیسے نعرے شامل تھے۔ تقاریر میں نواز شریف کیخلاف کیسز کو جھوٹ قرار دیا گیا، حکومت کیخلاف نعرے بازی کی گئی اور کہا گیا کہ حکومت نے عوام سے جھوٹ بولا، اپنے دعووں پر پوری نہیں اتری، ہم نے لوڈ شیڈنگ ختم کی اور اب بیس گھنٹے لوڈ شیڈنگ ہو رہی ہے۔ تقاریر میں مزید کہا گیا کہ نواز شریف نے پاکستان کو موٹروے دی، شہباز شریف نے پنجاب کو سڑکوں کا جال دیا، ماضی میں ہماری حکومت پر شب خون نہ مارا گیا ہوتا تو آج پورے پاکستان میں موٹرویز ہوتے۔ 

واضح رہے پی ڈی ایم 13 دسمبر کو مینار پاکستان میں جلسہ کرنے جا رہی ہے اور اس حوالے سے تحریک میں شامل تمام سیاسی جماعتوں کے رہنما متحرک نظر آ رہے ہیں اور شہر میں چھوٹے جلسے کر کے لوگوں کو مینار پاکستان جلسے کیلئے اکٹھا کر رہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں