Reconciliation

صلح کروانا ہمارے پیارے آقا صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی سنت ہے

ضلع ڈیرہ غازیخان ساؤتھ پنجاب بیورو چیف محمد اختر بھٹی صلح کروانا ہمارے پیارے آقا صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی سنت ہے اور اللہ عزوجل نے قرآن کریم میں صلح کروانے کا حکم بھی ارشاد فرمایا ہے میر روحل خان ASPسرکل تونسہ کا احسن اقدام، زمین کےجھگڑوں پر مقدمات کرانے والے رشتہ داروں کی آپس میں صلح کرادی۔ منور عباس ،ربنواز سکنائے موضع بیٹ فتح خان علاقہ تھانہ وہواکے رہائشی ہیں ایک دوسرے کے قریبی رشتہ دار ہیں عرصہ دراز سے زمین کے معمالات پر ایک دوسرے کے خلاف اندراج مقدمات کے لیے پس وپیش تھے۔ فریقین کے بچوں کے مستقبل کو بچانے اور ان کو معاشرے کا کارآمد فرد بنانے کے لیے منیر حسینASIانچارج چوکی نتکانی نے اختلافات پر فریقین کے درمیان صلح کروادی۔دونوں فریقین نے اس موقع پر مسکراتے چہروں کے ساتھ تونسہ پولیس کو زبردست خراج تحسین پیش کیا اور کہا ہم سب شریف لوگ ہیں اور ہمارا آج تک کبھی پولیس سے واسطہ نہیں پڑا تھا پہلی مرتبہ اتفاق ہوا لیکن جس طرح پولیس نے ہماری مدد کی اور ہمارے اختلافات کو دور کرواکر ہماری صلح کروائی یہ صرف اور صرف کوئی اپنا ہی کرسکتا ہے اور پولیس سے ہمیں جو اپنائیت ملی ہے اس کا شکریہ ادا کرنے کے لئے ہمارے پاس الفاظ نہیں ہیں۔

صلح کروانا ہمارے پیارے آقا صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی سنت ہے 1
صلح کروانا ہمارے پیارے آقا صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی سنت ہے 2

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں