ملک بھر میں یوم عاشور آج مذہبی عقیدت واحترام سےمنایا گیا 1

ملک بھر میں یوم عاشور آج مذہبی عقیدت واحترام سےمنایا گیا

کربلا میں حضرت امام حسین رضی اللہ تعالیٰ عنہ اور ان کے ساتھیوں کی جانب سے دی گئی عظیم قربانیوں کو خراجِ عقیدت پیش کرنے کے لئے ملک بھر میں یوم عاشور دس محرم الحرام آج مذہبی عقیدت و احترام سے منایا گیا۔

اسلامی تاریخ میں واقعہ کربلا سے پہلے یا بعد کوئی ایسا دل سوز واقعہ نہیں گزرا جسے برسوں یاد رکھا گیا ہو واقعات رونما ہوتے ہیں اور کچھ عرصہ بعد تاریخ کے اوراق میں گم ہو جاتے ہیں، یہ امتیاز صرف واقعہ کربلا کو حاصل ہےکہ دنیا بھر میں نواسہ رسول امام حسین علیہ اسلام کی اس عظیم قربانی کی یاد منائی جاتی ہے۔

واقعہ کربلا حق و باطل کے درمیان امتیاز کی علامت ہے ظلم اور بربریت کے خلاف اس کی مثال رہتی دنیا تک دی جاتی رہے گی۔

اسی مناسبت سے ملک کے تمام شہروں اور قصبوں میں ماتمی جلوس برآمد ہوں گے، کورونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لئے ماتمی جلوسوں کے لئے احتیاطی تدابیر بھی جاری کی گئی ہیں، علمائے کرام اور ذاکرین حضرت امام حسین رضی اللہ تعالیٰ عنہ کی تعلیمات اور سانحہ کربلا کے مختلف پہلوئوں پر روشنی ڈالیں گے۔

ملک کے مختلف علاقوں میں سخت سیکیورٹی میں ماتمی جلوس نکالے جائیں گے جس میں عزاداران ماتم اور نوحہ خوانی کرتے ہوئے شہدائے کربلا پر ڈھائے گئے مظالم کو یاد کرینگے، جلوسوں کے راستوں میں بڑی تعداد میں نذر و نیاز کا سلسلہ جاری رہا۔

یوم عاشور کے جلوسوں کی حفاظت کے لیے انتہائی سخت انتظامات کیے گئے ہیں، متعدد شہروں میں جلوس کی گزرگاہوں میں موبائل فون سروس بند کی بندش رہی اور موٹر سائیکل کی ڈبل سواری پر بھی پابندی عائد کردی گئی ۔

کراچی میں دس محرم الحرام عاشورہ کی مرکزی مجلس جلوس نشتر پارک سے برآمد ہوا، شرکا نماز ظہرین تبت سینٹر پرادا کی، بعدازاں جلوس اپنے مقررہ راستوں نمائش چورنگی، سی بریز، ایمپریس مارکیٹ، ریگل چوک، تبت سینٹر، ریڈیو پاکستان، بولٹن مارکیٹ، لائٹ ہاوس کھارادر سے ہوتا ہوا حسینیہ ایرانیاں پر اختتام پذیر ہوا۔

کراچی میں سندھ رینجرز اور پولیس نے یوم عاشور کے جلوسوں اور مجالس کے لئے فول پروف انتظامات کررکھے ہیں، جلوس کے روٹ پر آنے والی بلند عمارتوں اور مرکزی جلوس کے اطراف اور گزرگاہوں پر اسنائپرز بھی تعینات کئے گئے اور جلوس کے راستوں کی فضائی نگرانی بھی گی۔

راولپنڈی اسلام آباد کا مرکزی جلوس، ذوالجناح و علم امام بارگاہ عاشق حسین تیلی محلہ سے صبح 11 بجے برآمد ہوا۔

لاہور میں یوم عاشور کا مرکزی جلوس نثار حویلی اندرون موچی گیٹ سے برآمد ہوگا اور اپنے روایتی راستوں سے ہوتا ہوا کربلا گامے شاہ پہنچ کر اختتام پذیر ہوگا، اس کے علاوہ پشاور، ملتان، حیدر آباد، سکھر، بنوں اور دیگر شہروں میں بھی محرم الحرام کے جلوس روایتی راستوں سے ہوتے ہوئے اختتام پذیر ہوگے۔

نو محرم الحرام کےماتمی جلوس اختتام پذیر

ملک کے کئی شہروں میں نویں محرم الحرام کے ماتمی مرکزی جلوس اپنے روایتی راستوں سے ہوتے ہوئے اختتام پزیر ہوئے، نو محرم الحرام کے جلوسوں کےليے سيکيورٹی انتہائی سخت انتظامات کئے گئے تھے۔

کراچی، اسلام آباد اور کوئٹہ میں ڈبل سواری پر پابندی رہی جبکہ جلوس کےراستوں پر موبائل فون سروس بند رہی۔

کراچی میں نو محرم الحرام کا مرکزی جلوس کراچی میں نشترپارک، لاہور کا مرکزی جلوس اسلام پورہ پانڈو اسٹريٹ سے برآمد ہوا، کراچی میں جلوس کے شرکاء نے صبح نو بجے امام بارگاہ مارٹن روڈ سے نکالا، جس کے بعد شرکاء نے نماز کی ادائیگی کی اور پریڈی اسٹریٹ سے ہوتے ہوئے دوبارہ ايم اے جناح روڈ پر آئے، جلوس بولٹن مارکیٹ، بمبئی بازار سے ہوتا ہوا، حسینیہ ایرانیاں امام بارگاہ پر اختتام پذير ہوا۔

کراچی میں جلوس کی نگرانی کیلئے پانچ ہزار سے زائد اہلکاروں سمیت اسپیشل سکیورٹی یونٹ کے ماہر اسنائپرز بھی جلوس کی گزرگاہوں پر تعینات رہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں