پی ٹی آئی کا 2019 کا آئین کالعدم قرار، 2015 کا آئین بحال 1

پی ٹی آئی کا 2019 کا آئین کالعدم قرار، 2015 کا آئین بحال

تحریک انصاف نے 2019 کا پارٹی آئین کالعدم قرار دیتے ہوئے 2015 کا آئین بحال کر دیا۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم کی زیرصدارت پی ٹی آئی سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس ہوا جس ‏میں پارٹی آئین کے مسودہ کی

منظوری دی گئی۔

اجلاس میں 2019 کا پارٹی آئین کالعدم قرار دے کر 2015 کا آئین بحال کر دیا۔ نظرثانی کمیٹی کو ‏آئین میں مزید بہتری کا ٹاسک سونپ دیا گیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ 2015 آئین کے مطابق 40 رکنی کور کمیٹی قائم کی جائےگی جب کہ 24 رکنی ‏سینٹرل ایگزیکٹوکمیٹی قائم ہو گی۔

پارٹی آئین کےمطابق پارٹی عہدوں کی مدت2سال ہو گی۔ 2015 آئین کے تحت قومی سطح پرپارٹی ‏کا الیکشن کمیشن تشکیل دیا جائے گا۔

خیبرپختونخوا بلدیاتی الیکشن کے نتائج پر وزیراعظم نے پی ٹی آئی کی تمام تنظیموں کو تحلیل ‏کرتے ہوئے تمام ممبران کو ان کے عہدوں سے ہٹا دیا تھا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں