election-commission-statement-on-census

قومی اسمبلی کی بارہ نشستیں کم ہونے کا امکان

اسلام آباد: الیکشن کمیشن آف پاکستان کا کہنا ہے کہ مردم شماری کے حتمی نتائج کی اشاعت حلقہ بندیوں پر اثر انداز ہوسکتے ہیں۔

اس بات کا عندیہ اسلام آباد میں چیف الیکشن کمشنر کی زیرصدارت ہونے والے الیکشن کمیشن کے اہم اجلاس میں دیا گیا، اجلاس میں مردم شماری کےاعداد وشمارکی حتمی اشاعت کا جائزہ لینے کے ساتھ ساتھ چوبیسویں اور پچیسویں آئینی ترامیم اورحلقہ بندی پرممکنہ اثرات پر بھی گفتگو کی گئی۔

اسپیشل سیکرٹری الیکشن کمیشن نے اجلاس کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ مردم شماری کے نتائج کی اشاعت پرحلقہ بندیوں پراثرات ہوسکتےہیں،عبوری اورحتمی اعدا دو شمارمیں فرق ہوا تو نشستوں میں ردوبدل ہوگا۔

اسپیشل سیکرٹری الیکشن کمیشن نے بتایا کہ قبائلی علاقہ جات کےا نضمام سےقومی اسمبلی کی بارہ نشستوں ختم ہوں گی، اسی بنا پر خیبرپختونخوا کی قومی اسمبلی حلقہ جات کی حلقہ بندی دوبارہ ہوگی، جس کے باعث تمام قومی اسمبلی کےحلقہ جات کےنام ونمبر تبدیل ہوجائیں گے۔

بریفنگ میں بتایا گیا کہ کےپی اسمبلی کیلئےسولہ عام نشستوں کے اضافےسے نئی حلقہ بندی ہوگی۔

اجلاس میں موجود سیکرٹری قانون وانصاف نے بتایا کہ مردم شماری حتمی نتائج کی اشاعت کابینہ کے ایجنڈے میں آچکی ہے،کابینہ میں گفتگوہ وئی نشستوں کی تعداد میں ردوبدل ہوسکتی ہےیا نہیں؟َکابینہ کےفیصلےکےبعد صورتحال واضح ہو جائے گی۔

اس موقع پر سیکرٹری پارلیمانی امور نے شرکا کو بتایا کہ کابینہ کو الیکشن کمیشن کےحلقہ بندی پر فیصلہ کرنےکا اختیارہے، اجلاس میں مردم شماری نتائج الیکشن کمشین کو کوفراہم کرنےکیلئے31دسمبر دو ہزار بائیس کی تاریخ تجویز کی گئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں