Dozens of judges got plots

اسلام آباد میں دو نئے سیکٹرز، درجنوں ججز کو پلاٹ مل گئے

اسلام آباد میں وزارت ہاؤسنگ کے ذیلی ونگ فیڈرل گورنمنٹ ایمپلائز ہاؤسنگ اتھارٹی نے سیکٹر ایف 14، اور سیکٹر ایف 15 کے پلاٹس کی قرعہ اندازی کے نتائج جاری کیے ہیں۔

ایف چودہ ،ایف پندرہ کے پہلے مرحلے میں مختلف کیٹگریز کے4700 پلاٹس کی قرعہ اندازی کی گئی، جس میں اعلیٰ عدلیہ کے ججز اور بیوروکریسی سے تعلق رکھنے والی شخصیات کے بھی پلاٹ نکلے۔

چیف جسٹس گلزار احمد سمیت سپریم کورٹ کے آٹھ ججز کے پلاٹ نکلے ہیں، جن میں جسٹس عمر عطا، اعجاز الاحسن، مظہر عالم، قاضی امین، سردار طارق شامل ہیں۔

سابق چیف جسٹس انور ظہیر جمالی، ان کی اہلیہ جسٹس اشرف جہاں، سپریم کورٹ کے سابق جج امیر ہانی مسلم، پانامہ کیس کا فیصلہ تحریر کرنے والے اعجاز افضل خان، جسٹس مشیر عالم اور جسٹس منظور احمد ملک کے بھی پلاٹ نکلے۔

ہائیکورٹس اور ماتحت عدلیہ کے درجن بھر ججز بھی ان کامیاب افراد میں شامل ہیں جن کے پلاٹ سرکاری قرعہ اندازی میں نکلے.

چار ہزار 800 کے لگ بھگ کامیاب امیدواروں میں وزیراعظم کے دو مشیر بھی شامل ہیں۔

ججز کے علاوہ ملک کے معروف بیورکریٹس کے بھی پلاٹ نکلے۔ سابق چیئرمین ایف بی آر ڈاکٹر محمد ارشاد، سابق چیئرمین این ایچ اے شاہد اشرف تارڑ اور وفاقی سیکرٹری کیپٹن ریٹائرزاہد سعید، معروف بیوروکریٹ حضر حیات خان، سابق ڈی جی پاکستان پوسٹ اعجاز احمد منہاس، بیوروکریٹ حضر حیات خان، زاہد سعید اور سیکرٹری داخلہ یوسف نسیم کھوکھر کے بھی پلاٹ نکلے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں