bed-table-and-chair-for-shahbaz-sharif-in-jail

شہباز شریف کو جیل میں بستر، ٹیبل اور کرسی کی فراہمی کی درخواست پر عدالت کا فیصلہ

لاہور: احتساب عدالت نے شہباز شریف کو جیل میں بستر فراہم کرنے کی درخواست نمٹا دی، اپوزیشن لیڈر کو بیڈ، ٹیبل اور کرسی فراہم کر دی گئی۔

جیل رپورٹ کے مطابق احتساب عدالت کے حکم پر کوٹ لکھپت جیل میں شہباز شریف کو بیڈ، ٹیبل اور کرسی فراہم کر دی گئی، عدالت نے جیل حکام کی رپورٹ کی روشنی میں درخواست نمٹا دی، درخواست کی سماعت احتساب عدالت کے جج جواد الحسن نے کی۔

دریں اثنا، احتساب عدالت میں شہباز شریف کی جیل میں میڈیکل بورڈ تشکیل دینے کی درخواست پر سماعت ہوئی، عدالت نے اس سلسلے میں نیب سے رپورٹ طلب کر لی۔

احتساب عدالت کے ایڈمن جج جواد الحسن نے نیب پراسیکیوٹر سے استفسار کیا کہ رپورٹ کیوں جمع نہیں ہوئی، نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ تفتیشی افسر سپریم کورٹ میں مصروف ہیں، آئندہ سماعت پر جواب جمع کروا دیں گے۔

عدالت نے پراسیکیوٹر کی استدعا پر سماعت 13 جنوری تک ملتوی کر دی، فاضل جج نے شہباز شریف کے ایسوسی ایٹ وکیل کو کہا کہ شہباز شریف پیشی پر کمرہ عدالت میں پریس کانفرنس شروع کر دیتے ہیں جس سے عدالتی وقت برباد ہوتا ہے، ہم اس کیس کو بہت باریکی سے دیکھ رہے ہیں۔

فاضل جج کا کہنا تھا کہ امجد پرویز ایڈووکیٹ کو سمجھا دیا ہے کہ اب شہباز شریف یہاں صرف کیس سے متعلق ہی بات کریں کیوں کہ ہر بار پیشی پر دو تین گھنٹے ضایع ہو جاتے ہیں۔

عدالت نے تحفظات کا اظہار کیا کہ کرونا وائرس کا بھی ڈر ہے، ہر پیشی پر کمرہ عدالت کو بھر دیا جاتا ہے، اللہ نہ کرے کسی ایک کو کرونا ہو گیا تو پوری عدالت متاثر ہوگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں