cases were filed against the League workers

لاہور جلسے سے پہلے ہی لیگی کارکنوں کے خلاف مقدمات بن گئے

 لیگی رہنمائوں کیخلاف بڑے جلسے سے قبل بڑے مقدمے درج ہونے لگے۔ ٹاؤن شپ پولیس نے مسلم لیگ نون کی کارنر میٹنگ کی ایف آئی آر درج کر لی، مقدمے میں 5نامزد اور 25نامعلوم افراد شامل ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق لا ہور جلسے سے قبل ہی لیگی کارکنوں کیخلاف مقدمات درج ہونا شروع ہوگئے ہیں۔ ٹاؤن شپ پولیس نے مسلم لیگ نون کی کارنر میٹنگ کا مقدمہ درج کر لیا ۔ ایف آئی آر پٹواری عمران خان کی مدعیت میں درج کی گئی ہے۔مقدمہ میں  5 نامزداور 25نامعلوم افراد شامل ہیں۔ نامزد افراد میں کارنر میٹنگ کے آرگنائزرشہباز چدھڑ، سینئر رہنماعبدالرشید،سابق وائس چیئرمین میاں افضال اوررانا شوکت شامل ہیں۔مدعی نے الزام لگایا ہے کہ کارنر میٹنگ میں شرکاءنے ماسک کا استعمال نہ کیا اور سماجی فاصلے کی بھی خلاف ورزی ہوئی۔

 واضح رہے اس سے قبل لیگی رہنماؤں اور کارکنوں کیخلاف مقدمہ تھانہ شیرا کوٹ میں پولیس کی مدعیت میں درج کیا گیا ہے۔ دو روز قبل شیرا کوٹ میں لیگی رہنماؤں نے کارنر میٹنگ سے خطاب کیا تھا۔ ایف آئی آر کے مطاق اایاز صادق، جاوید لطیف، خواجہ سعد رفیق، مہر اشتیاق، رانا مشہود، عطااللہ تارڑ و دیگر لاؤڈ سپیکر پر عوام کو اشتعال دلاتے رہے۔ میٹنگ کیلئے روڈ کو بلاک کیا گیا جبکہ کورونا ایس او پیز کی بھی خلاف ورزی کی گئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں