sraeli-bombing-2-month-old-baby-miraculously-rescued-from-rubble-eyes-watering

اسرائیلی بمباری، 2 ماہ کا کمسن ملبے سے معجزانہ طور پر زندہ برآمد، تصویر نے آنکھیں نم کردیں

اسرائیل نے جارحیت کی انتہا کردی، قابض فوج کی فضائی بمباری میں خوش قسمتی سے 2 ماہ کا بچہ محفوظ رہا، ملبے تلے دبے بچے کو بحفاظت نکال لیا گیا۔

غیرملکی خبرساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق غزہ میں قابض اسرائیلی فورسز کی فضائی بمباری کا سلسلہ جاری ہے، گزشتہ روز ہونے والے حملوں میں ایک ایسا بچہ بھی ہے جس کی زندگی محفوظ رہی۔

A two-month old baby injured in Israeli attack carried out to home of Palestinian Abu Khatab Familiy living in Al-Shati Camp in Gaza Strip, being brought to Shifa Hospital on May 15, 2021, in Gaza.

رپورٹ میں بتایا گیا کہ اسرائیلی فون نے گزشتہ روز ایک گھر پر فضائی حملہ کیا جس کے نتیجے میں رہائش پذیر خاندان کے تمام افراد شہید ہوگئے لیکن ان میں 2 سالہ بچہ معجزانہ طور پر بچ گیا، کمسن کو طبی امداد فراہم کی جارہی ہے۔

یہ بھی کہا گیا کہ گھر پر حملے میں فیملی کے 7 افراد شہید ہوئے لیکن ان میں عمر نامی بچے کو ایک نئی زندگی ملی۔ سوشل میڈیا پر وائرل اس بچے کی تصویر نے انسانیت کی آنکھیں نم کردیں۔

خیال رہے کہ قابض اسرائیلی فورسز نے آج مزید 35 فلسطینی شہید کر دیے، جس سے اسرائیلی جارحیت سے شہید فلسطینیوں کی تعداد 181 ہو گئی۔

ایک ہفتے سے اسرائیلی فورسز کا فلسطین میں وحشیانہ تشدد جاری ہے، فورسز آبادیوں پر بم باری کر رہی ہیں، اسرائیلی حملوں میں 725 گھر، 76 رہائشی، ار 63 سرکاری عمارتیں تباہ ہو چکی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں