israeli-envoy-walked-out

فلسطینی وزیر خارجہ کا خطاب، اسرائیلی مندوب اجلاس چھوڑ کر چلتے بنے

نیویارک: فلسطینی وزیر خارجہ ڈاکٹر ریاض المالکی کی تقریر کے دوران اسرائیلی مندوب نے واک آؤٹ کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی اجلاس میں فلسطینی وزیر خارجہ کا خطاب شروع ہوتے ہی اسرائیلی ایلچی گیلاد ایرڈن اجلاس چھوڑ کر چلتے بنے۔

ڈاکٹر ریاض المالکی نے یو این جنرل اسمبلی سے پرجوش خطاب کرتے ہوئے کہا اسرائیل کو دفاع کا حق دینے والے ظلم کے حمایتی ہیں، بہت ہوگیا اسرائیل کا غاصبانہ تسلط ختم کرانا ہوگا۔

فلسطینی وزیر خارجہ کہا اسرائیلی فوج غزہ میں قتل عام کر رہی ہے اور اس پر شرمندہ تک نہیں ہے، یہ واضح پیغام ہے کہ سب غزہ میں جاری حالیہ صورت حال سے متعلق اقدامات چاہتے ہیں، اسرائیلی فورسز کی جانب سے بچوں کو بھی نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

انھوں نے کہا کہ اسرائیلی فورسز رات کو سوئے فلسطینیوں کو نشانہ بنا رہی ہے، وبا کے دوران اقوام متحدہ اسرائیلی جارحیت کو رکوائے۔

فلسطینی وزیر خارجہ نے کہا کہ فلسطینی عوام نے حب الوطنی کے اصولوں کو ترک نہیں کیا، اسرائیل نے مقدس مہینے میں بیت المقدس کو نشانہ بنایا، اسرائیل عالمی قوانین کی خلاف ورزی کر رہا ہے، اسرائیل نے عالمی معاہدوں کو بھی نظر انداز کیا، جو کہتے ہیں اسرائیل کو دفاع کا حق ہے وہ ظلم کی حمایت کرتے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ مسجد الاقصیٰ میں نہتے نمازیوں پر یلغار کی گئی، اسرائیل نے نہتے فلسطینیوں پر مظالم کی انتہا کر رکھی ہے، اب بہت ہوگیا دنیا کو اسرائیلی تسلط کا خاتمہ کرنا ہوگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں